Tasawwuf Advertisement 2024

قومی خبریں

خواتین

بی جے پی کانگریس کے انتخابی منشور سے خوفزدہ۔چدمبرم

کانگریس رہنما نے کہا کہ پارٹی کا انتخابی دستاویز تمام طبقات کے لیے انصاف کا وعدہ کرتا ہے

نئی دہلی: کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم نے کہاہے کہ ‘دولت کی دوبارہ تقسیم اور ‘وراثتی ٹیکس پر ‘من گھڑت تنازعہ ظاہر کرتا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اس لوک سبھا الیکشن میں خوفزدہ ہے اور جھوٹ کا سہارا لینے پر آمادہ ہے کیونکہ ‘مودی کی گارنٹی کوئی اثر چھوڑنے میں کامیاب نہیں ہو سکی۔لوک سبھا انتخابات کے لیے کانگریس کا منشور تیار کرنے والی کمیٹی کے چیئرمین چدمبرم نے کہا کہ پارٹی کا یہ انتخابی دستاویز کسی خاص مذہب کے لیے نہیں بلکہ تمام طبقات کے لیے انصاف کا وعدہ کرتا ہے۔
اپنےایک بیان میںچدمبرم نے کہا، ’’یہ واضح ہے کہ بی جے پی کانگریس کے انتخابی منشور 2024 سے خوفزدہ ہے۔ اس منشور نے لوگوں کے ذہنوں میں خاص طور پر غریبوں اور متوسط ​​طبقے کے لوگوں کے ذہنوں پر گہرا اثر چھوڑا ہے۔‘‘ سابق مرکزی وزیر خزانہ نے کہا کہ یہ منشور درج فہرست ذاتوں، درج فہرست قبائل، دیگر پسماندہ طبقات، نوجوانوں اور خواتین کو نئی امید دیتا ہے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ ‘دولت کی دوبارہ تقسیم اور ‘وموروثی ٹیکس پر من گھڑت تنازعہ اس خوف کی نشاندہی کرتا ہے جس نے بی جے پی کو پوری طرح اپنی گرفت میں لے لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کے منشور میں ان دو موضوعات کا کوئی ذکر نہیں ہے۔سابق وزیر خزانہ نے کہا، ’’میں لوگوں کو یاد دلانا چاہتا ہوں کہ ‘ویلتھ ڈیوٹی کو کانگریس حکومت نے 1985 میں ختم کر دیا تھا۔ 2015 میں بی جے پی حکومت نے ‘ویلتھ ٹیکس کو ختم کر دیا تھا۔‘‘ انہوں نے کہا کہ کانگریس کا منشور تین جادوئی الفاظ ‘کام، دولت اور بہبود پر مبنی ہے۔

No Comments:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *