Tasawwuf Advertisement 2024

قومی خبریں

خواتین

ملزم کی پولیس حراست میں موت کے معاملے میں سلمان خان کو راحت

جسٹس ریوتی موہتےاور شیام چندک کی ڈویژنل بنچ نےاداکارکانام ہٹانے کا حکم دیا

ممبئی :سلمان خان کے گھر پر رواں سال 14 اپریل کو فائرنگ ہوئی تھی اور اس معاملے میں پکڑے گئے ایک ملزم کی پولیس حراست میں موت ہو گئی تھی۔ اس واقعہ کے بعد مہلوک ملزم کی ماں نے بامبے ہائی کورٹ میں ایک عرضی داخل کر سی بی آئی سے جانچ کرانے کا مطالبہ کیا تھا۔ اس عرضی میں انھوں نے سلمان خان کو بھی فریق بنایا تھا، لیکن بامبے ہائی کورٹ نے سلمان کو بڑی راحت دی ہے۔ عدالت نے پیر کے روز حکم دیا ہے کہ عرضی سے سلمان خان کا نام ہٹایا جائے۔جسٹس ریوتی موہتے-دیرے اور شیام چندک کی ڈویژنل بنچ نے عرضی دہندہ ریتا دیوی کو حکم دیا ہے کہ وہ عرضی سے سلمان خان کا نام ہٹا دیں۔ ریتا دیوی اس معاملے میں ہلاک ملزم انوج تھاپن کی ماں ہیں۔ انوج کی لاش یکم مئی کو کرائم برانچ پولیس لاک اَپ کے بیت الخلاء سے برآمد ہوئی تھی۔
واضح رہے کہ رواں سال 14 اپریل کو ایک موٹر سائیکل پر دو افراد سلمان خان کے گھر گیلیکسی کے سامنے آئے اور کئی راؤنڈ فائرنگ کر فرار ہو گئے تھے۔ بعد میں فائرنگ کرنے کے ملزم وکی گپتا اور ساگر پال کو پولیس نے گجرات سے گرفتار کر لیا تھا۔ اس معاملے کی جانچ کے دوران ممبئی کرائم برانچ نے 26 اپریل کو پنجاب سے انوج تھاپن اور ایک دیگر شخص کو گرفتار کیا تھا۔ ان دونوں پر الزام تھا کہ انھوں نے ہی سلمان خان کے گھر فائرنگ کرنے والے ملزمین کو اسلحے مہیا کرائے تھے۔

No Comments:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *