Tasawwuf Advertisement 2024

قومی خبریں

خواتین

فلسطین حامی احتجاج کے دوران گرفتار افراد کے خلاف الزامات واپس

تمام الزامات مجرمانہ تجاوز کے بارے میں تھے اور ان میں کوئی ممکنہ وجہ نہیں تھی

ہیوسٹن: ٹریوس کاؤنٹی کے اٹارنی کے دفتر نے تصدیق کی ہے کہ یونیورسٹی آف ٹیکساس، آسٹن کے کیمپس میں فلسطینیوں کے حامی احتجاج کے دوران گرفتار کیے گئے 57 افراد کے خلاف تمام الزامات واپس لے لیے گئے ہیں۔زنہوا خبر رساں ایجنسی نے رپورٹ کیا کہ دفتر نے جمعہ کو کہا کہ تمام الزامات مجرمانہ تجاوز کے بارے میں تھے اور ان میں ممکنہ وجہ نہیں تھی۔کاؤنٹی اٹارنی ڈیلیا گارزا، جس کا دفتر بدعنوانی کے مقدمات کو ہینڈل کرتا ہے، جمعرات کو مقامی میڈیا آؤٹ لیٹ آسٹن امریکن سٹیٹس مین کو بتایا کہ ان کے دفتر نے دفاعی وکلاء کے ساتھ اتفاق کیا ہے کہ ممکنہ وجہ گرفتاری کے حلف ناموں میں “کمیاں” تھیں، جو کہ قانون کے ذریعے بھری گئی دستاویزات ہیں۔ایک اخبار کے مطابق، یونیورسٹی نے جمعہ کے روز کہا کہ بدھ کے احتجاج کے دوران جن لوگوں کو مجرمانہ مداخلت کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا، انہیں یونیورسٹی کی موجودہ پالیسی کے مطابق کیمپس سے روک دیا جائے گا۔فلسطین یکجہتی کمیٹی، ایک رجسٹرڈ طلباء گروپ اور فلسطین میں نیشنل اسٹوڈنٹس فار جسٹس کے ایک چیپٹر نے بدھ کے روز اس ریلی کا اہتمام کیا تاکہ اسرائیل فلسطین تنازعہ کے خاتمے کا مطالبہ کیا جائے۔جب کچھ لوگوں نے کیمپ لگانے کے لیے خیمے لگانا شروع کر دیے، جس کے بارے میں فلسطینی یکجہتی کمیٹی نے کہا تھا کہ اس کا ارادہ تھا، پولیس نے تقریباً فوراً ہی خیمے اتار لیے۔یو ٹی آسٹن کیمپس کی سرگرمیوں یا کارروائیوں میں رکاوٹ کو برداشت نہیں کرتا جیسا کہ ہم نے دوسرے کیمپس میں دیکھا ہے،یو ٹی ڈویژن آف اسٹوڈنٹ افیئرز نے احتجاج سے پہلے ایک بیان میں کہا۔
ٹیکساس کے گورنر گریگ ایبٹ نے 27 مارچ کو ایک انتظامی حکم نامہ جاری کیا جس میں یونیورسٹیوں سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ اپنی آزادانہ تقریر کی پالیسیوں پر نظر ثانی کرکے یہود دشمنی کو روکیں۔ٹیکساس سے کیلیفورنیا تک، فلسطینیوں کے حامی مظاہرے پورے امریکہ کے کیمپسز میں پھیل رہے ہیں کیونکہ غزہ میں اسرائیل-فلسطینی تنازعہ جاری ہے۔ پولیس نے سینکڑوں مظاہرین کو گرفتار کر لیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ییل یونیورسٹی، نیویارک یونیورسٹی، میساچوسٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی، یونیورسٹی آف مشی گن، یونیورسٹی آف نارتھ کیرولینا، براؤن یونیورسٹی، یونیورسٹی آف سدرن کیلیفورنیا اور دیگر یونیورسٹیوں کے طلباء نے بھی اپنے ساتھیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے کیمپ لگائے۔

No Comments:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *