Tasawwuf Advertisement 2024

قومی خبریں

خواتین

اروند کیجریوال کی عبوری ضمانت پرفیصلہ محفوظ

نو مئی کو سپریم کورٹ کیجریوال کی عبوری ضمانت پر اپنا فیصلہ دے سکتی ہے

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے دہلی شراب گھوٹالہ کیس میں تہاڑ جیل میں بند اروند کیجریوال کی عبوری ضمانت پر اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا۔ اروند کیجریوال کی عبوری ضمانت کو لے کر منگل کو سپریم کورٹ میں طویل سماعت ہوئی۔ اس دوران ای ڈی اور ابھیشیک منو سنگھوی نے اپنے اپنے دلائل پیش کئے۔ دونوں فریقین کے دلائل سننے کے بعد سپریم کورٹ نے اروند کیجریوال کی عبوری ضمانت پر اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا۔ اب 9 مئی کو سپریم کورٹ کیجریوال کی عبوری ضمانت پر اپنا فیصلہ دے سکتی ہے۔

توقع تھی کہ سپریم کورٹ آج ہی اپنا فیصلہ سنائے گی۔ لیکن سپریم کورٹ کی بنچ اروند کیجریوال کے بارے میں کوئی فیصلہ دیئے بغیر چلی گئی۔ سپریم کورٹ اب 9 مئی کو اس کیس کی سماعت کرے گی اور اپنا فیصلہ سنائے گی۔ اس سے پہلے سپریم کورٹ نے کہا کہ یہ ایک غیر معمولی صورتحال ہے کیونکہ لوک سبھا انتخابات ہو رہے ہیں۔ جسٹس سنجیو کھنہ اور جسٹس دیپانکر دتہ کی بنچ نے کہا کہ اروند کیجریوال عادی مجرم نہیں ہیں۔

سپریم کورٹ نے کہا، ‘وہ دہلی کے وزیر اعلیٰ اور منتخب لیڈر ہیں۔ الیکشن ہو رہے ہیں۔ یہ ایک غیر معمولی صورتحال ہے۔ ایسا نہیں ہے کہ وہ عادی مجرم ہے۔ ہم اس بات پر غور کریں گے کہ آیا انہیں عبوری ضمانت پر رہا کیا جانا چاہئے یا نہیں۔ سپریم کورٹ نے چیف منسٹر اروند کیجریوال کی جانب سے پیش ہونے والے سینئر وکیل ابھیشیک سنگھوی سے کہا کہ عدالت انہیں عبوری ضمانت نہیں دینا چاہتی جب آپ ملیں تو کام کریں۔ بنچ نے کہا، ‘اگر آپ سرکاری کام کرتے ہیں تو یہ مفادات کا ٹکراؤ ہوگا اور ہم ایسا نہیں چاہتے۔

No Comments:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *