Tasawwuf Advertisement 2024

قومی خبریں

خواتین

حماس کے بعد حزب اللہ اسرائیل کیخلاف جنگ میں شامل

اسرئیل کے 8 شہروں میں اب بھی اسرائیلی فوجیوں اور مزاحمت کاروں کے درمیان لڑائی جاری

غزہ: فلسطینی علاقوں پر دہائیوں سے قابض صیہونی فورسز نے فلسطینی مزاحمتی تنظیم حماس کے بعداپنے خلاف ایک اور محاذ کھول لیا۔اسرائیلی میڈیا کے مطابق صیہونی فوج کی جانب سے لبنان کے سرحدی علاقہ پر گولہ باری کی گئی۔ صیہونی میڈیا کا دعویٰ ہیکہ لبنان کی سرحد پار سے مارٹر گولے فائر ہونے کے بعد اسرائیلی فورسز نے ان کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔اب اطلاعات ہیں کہ اسرائیل۔ فلسطین جنگ میں حزب اللہ بھی شامل ہو گئی ہے۔المنار ٹی وی کے مطابق حزب اللہ کے درجنوں جنگجو لبنان سے اسرائیل میں داخل ہو چکے ہیں۔لبنان سے تعلق رکھنے والی تنظیم حزب اللہ نے اعلان کیا ہےکہ حزب اللہ کے عماد مغنیہ یونٹ نے تین اسرائیلی فوجی چوکیوں پر حملہ کیا۔ تینوں فوجی چوکیاں مقبوضہ شیبہ فارمز میں واقع ہیں۔ گزشتہ روز فلسطینی مزاحمتی تنظیم حماس نے اسرائیل پر زمین، فضا اور سمندر سے اس قدر اچانک حملے کیے کہ فلسطینی علاقوں پر قابض اسرائیل کو بالکل سنبھلنے کا موقع ہی نہ ملا۔حماس کی جانب سے دعویٰ کیا گیا کہ انہوں نے اسرائیل پر 5000 سے زائد راکٹ برسائے جبکہ غیر ملکی میڈیا کے مطابق حماس کے حملوں میں اب تک متعدد اسرائیلی فوجیوں سمیت 600 سے زائد افراد ہلاک اور 1800 سے زائد زخمی ہوچکے ہیں۔ دوسری جانب اسرائیلی وزیراعظم بنجامن نتن یاہو نے بھی حماس کے خلاف جنگ کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم حماس سے ہر صورت بدلہ لیں گے۔ اسرائیلی فورسز کی جانب سے غزہ پٹی پر درجنوں راکٹ برسائے گئے جس میں اب تک 370 کے قریب فلسطینی شہید اور سینکڑوں زخمی ہو چکے ہیں جبکہ متعدد مقامات پر اب بھی حماس کی القسام بریگیڈ اور صیہونی فورسز کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں۔اسرائیل نے حماس کے اچانک حملے کے ایک دن بعد جنوبی اسرائیل کے متعدد علاقوں میں فلسطینی جنگجوؤں اور اسرائیلی فوج کے درمیان شدید لڑائی جاری رکھنے کے طور پر ’’ریاست کے حالت جنگ میں ہونے‘‘کا اعلان کیا ہے۔ حزب اللہ نے لبنان سے مقبوضہ شیبہ فارمز پر مارٹر حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔تازہ اطلاعات کے مطابق حماس نے اسرائیل میں ایک اور کارروائی کرتے ہوئے 15 اسرائیلیوں کو ہلاک کردیا۔ حماس کی جانب سے عسقلان میں اسرائیلی فوجی اڈے پر حملہ کیا گیا اور فوجی اڈے میں موجود بکتر بند اور بھاری ہتھیار پر قبضہ کیا، اس دوران 15 اسرائیلی ہلاک ہوگئے جب کہ اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے حماس کے 4 ارکان شہید ہوگئے۔عرب میڈیا کے مطابق اسرائیل کے 8 شہروں میں اب بھی اسرائیلی فوجیوں اور حماس کے مزاحمت کاروں کے درمیان لڑائی جاری ہے۔ غزہ میں وزارت صحت کے حکام کے مطابق 20 معصوم بچے شہید ہوئے ہیں جبکہ زخمی ہونے والے فلسطینی بچوں کی تعداد 121 ہے۔اسرائیلی وزیراعظم نتن یاہو کا کہنا ہےکہ فلسطینی غزہ خالی کریں۔ انہوں نے کہا کہ حماس کے ٹھکانوں کو ملبے کا ڈھیر بنایا جائے گا۔ اسرائیل ہر جگہ بھرپور طاقت استعمال کرے گا تاہم اسرائیلی وزیراعظم نے طاقت کے اس استعمال سے پہلے یہ نہیں بتایا کہ غزہ میں رہنے والے 20 لاکھ فلسطینی جائیں کہاں؟۔

No Comments:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *